اس نیوز لیٹر کا پرنٹ ہر گز نہ نکالیے،کیونکہ اس میں تصاویر ہیں اور جاندار کی تصویر کا پرنٹ نکالناشرعاًجائز نہیں۔

رمضان المبارک کی فضیلت

 

ترجمۂ کنزالعرفان: رمضان کا مہینہ ہے،جس میں قرآن نازل کیا گیاجو لوگوں کے لیے ہدایت اور رہنمائی ہےاور فیصلے کی روشن باتوں( پر مشتمل ہے۔)

(پارہ 2،سورۂ بقرہ،آ یت185)

امیر اہلسنّت مولانا محمد الیاس قادری دَامَـتْ بَـرَكَـاتُـهُـمُ الْـعَـالِـيَـهْ کا پیغام

یقیناًحفظِ قرآن کریم کار ثواب عظیم ہے،مگر یاد رہے حفظ کرنا آسان،مگر عمر بھر اس کو یاد رکھنا دشوار ہے۔حفاظ کو چاہیے کہ روزانہ کم ازکم ایک پارہ لازماًتلاوت کرلیا کریں۔جو حفاظ رمضان المبارک کی آمد سے تھوڑاعرصہ قبل فقط مصلیٰ سنانے کے لیے منزل پکی کرتے ہیں اور اس کے علاوہ مَعَاذَالـلّٰـه سارا سال غفلت کے سبب کئی آیات بھلائے رہتے ہیں انھیں چاہیے کہ وہ دوبارہ یاد کرلیں اور بھلانے کا جو گناہ ہوا اُس سے سچی توبہ کریں۔

(نماز کے احکام،ص 450)

سی-ای-او دارالمدینہ

طلبہ کو چاہیے کہ علم کی حفاظت کے لیے جوکچھ سیکھیں اسے نوٹ کر لیں،وقتاًفوقتاً دہراتے رہیں،اس پر عمل کریں،اپنےہم مکتب
اور رشتے داروں سے کریں اور حتی الامکان اپنی کتب،ٹیچرز اور اہل علم کی تعظیم کریں ،کیونکہ علم کی بنیاد ادب پر ہے۔

دارالمدینہ کے طلبہ کے لیے اہم اعلان

موجودہ ملکی صورت حال کے پیش نظر وفاقی اورصوبائی حکومتوں نے فیصلہ کیا ہے کہ ملک بھر کے تعلیمی اداروں میں زیر تعلیم طلبہ کو اگلی کلاسز میں کیا جائے۔چنانچہ حکومتی اعلامیے کے مطابق st کے نتائج کی بنیاد پردارالمدینہ انٹرنیشل اسلامک اسکول سسٹم کے تمام طلبہ کو اگلی کلاس میں کیا جاچکا ہے۔

فی زمانہ معاشرے میں جہاں کئی برائیاں عروج پر ہیں ان میں جھوٹ بولنا بھی شامل ہے۔آپس کی گفتگو میں ،فون پر ،S.M.Sپر الغرض جھوٹ بولنے کو معاذ اللہ برائی سمجھا ہی نہیں جاتا۔عام طور پرلوگ جھوٹ کے ذریعے دوسروں کو بیوقوف بناکر خوش ہوتے ہیں۔یہ شرعاً اور اخلاقاًبالکل درست نہیں۔والدین کو چاہیے کہ اپنے بچوں کوجھوٹ بولنے سے بچنے کی تربیت دیں کیونکہ
جھوٹ بولنا اللہ پاک کو سخت ناپسند ہے۔
جھوٹ بولنے والا دوزخ میں کتے کی شکل میں بدل جائے گا۔
جھوٹ بولنے والے سے فرشتہ ایک میل دور ہو جاتا ہے۔
جھوٹ بولنے والے پر لوگ بھروسہ نہیں کرتے ہیں۔
جھوٹ بولنے والے کو ہمیشہ شرمندگی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔
جھوٹ بولنے والے سے لوگ نفرت کرتے ہیں۔
اللہ پاک ہمیں جھوٹ سے بچنے کی توفیق عطا فرمائے۔

اپنے بچوں کو صحت مند سرگرمیوں میں مصروف رکھیے

ذہنی و جسمانی صحت سے طالب علم کے لیے کامیابی کی راہیں کھولنے میں مدد دیتی ہے۔والدین کو چاہیے کہ اپنے بچوں کو مختلف صحت مند سرگرمیاں فراہم کریں،ان میں سے چند حسب ذیل ہیں:
عام طور پر بچے گھر کا کام کرنے میں دلچسپی رکھتے ہیں۔ بچوں کی دلچسپی کے مطابق گھر کے چھوٹے موٹے کام ان میں تقسیم کیجیے تاکہ ان میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون اور مروت کا جذبہ پیدا ہو۔
بچوں کو ان کی عمر اور ذوق کے لحاظ سے کوئی نیا کام سکھانے کی کوشش کیجیے۔ جیسےکاغذ کے کھلونے بنانا، غیر جاندار کی تصویر بنانا، رنگ بھرنا، سلائی کرنا، کسی ڈیکوریشن پیس کو صاف کرنا وغیرہ۔
گھر میں لان یا کیاری کی جگہ ہو تو بچے کو کوئی پودا اُگانے اور اس کی دیکھ بھال کرنا سکھائیے۔
کبھی کبھار بچوں کے ساتھ ان کی ذہنی سطح کے مطابق کھیل میں شرکت کیجیے کبھی جیت کر کبھی ہار کر دونوں کیفیات میں صحیح طرزِ عمل کی تلقین کیجیے۔اس طرح بچوں کی جذباتی تربیت کے ساتھ ساتھ غلطیوں کی اصلاح بھی ہو گی۔
بچوں میں زبان دانی کی مہارتوں اور ذوق مطالعہ (Reading Habits)کو پروان چڑھائیے۔مکتبۃ المدینہ کی کتب و رسائل انھیں پڑھنے کوفراہم کیجیے۔خُوش خط لکھنے کی خُوب مشق کروائیے۔اس طرح نہ صرف آپ کے بچوں میں اُردو اور انگریزی کے ذخیرۂ الفاظ میں اضافہ ہوگا بلکہ لکھائی بھی بہتر ہوجائے گی ۔

آج کل کرونا وائرس کی وبا دنیا بھر میں پھیلی ہوئی ہےکرونا وائرس سے بچنے کے لیے حسب ذیل تدابیر خود بھی اختیار کیجیے اور اپنے بچوں کو بھی اس پر عمل کروائیے۔

اپنے ارد گرد کے ماحول کو صاف رکھیے ۔
وقتاًفوقتاً اور بالخصوص کھانے پینے سے پہلے بچوں کے دونوں ہاتھوں کو 20 سیکنڈ دھلوائیے۔
بچوں کو اچھی طرح پکا ہوا کھاناکھلائیں نیزسبزیاں اور پھل اچھی طرح دھوکر استعمال کروائیے۔
بخار ،نزلہ اور کھانسی وغیرہ کی علامات ظاہر ہوتے ہی ڈاکٹر سے رجوع کیجیے۔
بچوں کو ہر نماز سے قبل تازہ وضو کرنے کی ترغیب دلائیے کہ یہ مختلف بیماریوں اور انفیکشن سے بچاؤ کے لیے بہت معاون ہے۔
بچوں کو جانوروں اور پرندوں کے پاس نہ جانے دیجیے۔

مذکورہ بالا ہدایات پر عمل کرنے کے ساتھ ساتھ امیر اہلسنت بانئ دعوت اسلامی مولانا محمد الیاس عطار قادری دَامَـتْ بَـرَكَـاتُـهُـمُ الْـعَـالِـيَـهْکے عطا کردہ وبائی امراض سے حفاظت کےوظائف اور دُعائیں پڑھیے اور اپنے بچوں کو ترغیب بھی دلائیے۔ چھوٹے بچوں پریہ وظائف پڑھ کر دم کیاجاسکتا ہے۔

ان دعاؤں اور وظائف میں سے چند مندرجہ ذیل ہیں

ہر نماز کے بعد 25 باریَا شَافِی یَا کَافِی پڑھیے۔ 
10 بار یَا َماجِدُ پڑھ کر شربت پر دم کرکے پی لیجیے۔ 
اوّل آخر درود پاک پڑھ کر صبح و شام تین تین بار یہ دعا پڑھیے۔ 

 

اَللَّٰهُمَّ عَافِنِي فِي بَدَنِي اَللَّٰهُمَّ عَافِنِي فِي سَمْعِي اَللَّٰهُمَّ عَافِنِي فِي بَصَرِي لَآ اِلٰہَ اِلَّا أَنْتَ

(سنن ابی داؤد،حدیث5090)

لاک ڈاؤن میں اسکولز کی بندش کے دوران دارالمدینہ کی تعلیمی خدمات

ذہنی و جسمانی صحت سے طالب علم کے لیے کامیابی کی راہیں کھولنے میں مدد دیتی ہے۔والدین کو چاہیے کہ اپنے بچوں کو مختلف صحت مند سرگرمیاں فراہم کریں،ان میں سے چند حسب ذیل ہیں:
عام طور پر بچے گھر کا کام کرنے میں دلچسپی رکھتے ہیں۔ بچوں کی دلچسپی کے مطابق گھر کے چھوٹے موٹے کام ان میں تقسیم کیجیے تاکہ ان میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون اور مروت کا جذبہ پیدا ہو۔
بچوں کو ان کی عمر اور ذوق کے لحاظ سے کوئی نیا کام سکھانے کی کوشش کیجیے۔ جیسےکاغذ کے کھلونے بنانا، غیر جاندار کی تصویر بنانا، رنگ بھرنا، سلائی کرنا، کسی ڈیکوریشن پیس کو صاف کرنا وغیرہ۔
گھر میں لان یا کیاری کی جگہ ہو تو بچے کو کوئی پودا اُگانے اور اس کی دیکھ بھال کرنا سکھائیے۔
کبھی کبھار بچوں کے ساتھ ان کی ذہنی سطح کے مطابق کھیل میں شرکت کیجیے کبھی جیت کر کبھی ہار کر دونوں کیفیات میں صحیح طرزِ عمل کی تلقین کیجیے۔اس طرح بچوں کی جذباتی تربیت کے ساتھ ساتھ غلطیوں کی اصلاح بھی ہو گی۔
بچوں میں زبان دانی کی مہارتوں اور ذوق مطالعہ (Reading Habits)کو پروان چڑھائیے۔مکتبۃ المدینہ کی کتب و رسائل انھیں پڑھنے کوفراہم کیجیے۔خُوش خط لکھنے کی خُوب مشق کروائیے۔اس طرح نہ صرف آپ کے بچوں میں اُردو اور انگریزی کے ذخیرۂ الفاظ میں اضافہ ہوگا بلکہ لکھائی بھی بہتر ہوجائے گی ۔

آج کل کرونا وائرس کی وبا دنیا بھر میں پھیلی ہوئی ہےکرونا وائرس سے بچنے کے لیے حسب ذیل تدابیر خود بھی اختیار کیجیے اور اپنے بچوں کو بھی اس پر عمل کروائیے۔

اپنے ارد گرد کے ماحول کو صاف رکھیے ۔
وقتاًفوقتاً اور بالخصوص کھانے پینے سے پہلے بچوں کے دونوں ہاتھوں کو 20 سیکنڈ دھلوائیے۔
بچوں کو اچھی طرح پکا ہوا کھاناکھلائیں نیزسبزیاں اور پھل اچھی طرح دھوکر استعمال کروائیے۔
بخار ،نزلہ اور کھانسی وغیرہ کی علامات ظاہر ہوتے ہی ڈاکٹر سے رجوع کیجیے۔
بچوں کو ہر نماز سے قبل تازہ وضو کرنے کی ترغیب دلائیے کہ یہ مختلف بیماریوں اور انفیکشن سے بچاؤ کے لیے بہت معاون ہے۔
بچوں کو جانوروں اور پرندوں کے پاس نہ جانے دیجیے۔

مذکورہ بالا ہدایات پر عمل کرنے کے ساتھ ساتھ امیر اہلسنت بانئ دعوت اسلامی مولانا محمد الیاس عطار قادری دَامَـتْ بَـرَكَـاتُـهُـمُ الْـعَـالِـيَـهْکے عطا کردہ وبائی امراض سے حفاظت کےوظائف اور دُعائیں پڑھیے اور اپنے بچوں کو ترغیب بھی دلائیے۔ چھوٹے بچوں پریہ وظائف پڑھ کر دم کیاجاسکتا ہے۔

ان دعاؤں اور وظائف میں سے چند مندرجہ ذیل ہیں

ہر نماز کے بعد 25 باریَا شَافِی یَا کَافِی پڑھیے۔ 
10 بار یَا َماجِدُ پڑھ کر شربت پر دم کرکے پی لیجیے۔ 
اوّل آخر درود پاک پڑھ کر صبح و شام تین تین بار یہ دعا پڑھیے۔ 

 

اَللَّٰهُمَّ عَافِنِي فِي بَدَنِي اَللَّٰهُمَّ عَافِنِي فِي سَمْعِي اَللَّٰهُمَّ عَافِنِي فِي بَصَرِي لَآ اِلٰہَ اِلَّا أَنْتَ

(سنن ابی داؤد،حدیث5090)

Loading...